jump to navigation

Quratul Ain Haider – قرۃ العین حیدر

qurat-1_thumbnail.jpgqurat-4thumbnail1.jpgquratulain-3.jpgquratulain-41.jpg1-quratul-ain-haider.gif2-quratul-ain-haider.gif3-quratul-ain-haider.gif4-quratul-ain-haider.gif5-quratul-ain-haider.gif6-quratul-ain-haider.gif7-quratul-ain-haider.gif8-quratul-ain-haider.gif9-quratul-ain-haider.gif10-quratul-ain-haider.gif11-quratul-ain-haider.gif12-quratul-ain-haider.gif13-quratul-ain-haider.gif14-quratul-ain-haider.gif15-quratul-ain-haider.gif16-quratul-ain-haider.gif17-quratul-ain-haider.gif18-quratul-ain-haider.gif19-quratul-ain-haider.gif20-quratul-ain-haider.gif21-quratul-ain-haider.gif22-quratul-ain-haider.gif23-quratul-ain-haider.gif24-quratul-ain-haider.gif25-quratul-ain-haider.gif26-quratul-ain-haider.gif27-quratul-ain-haider.gif

Comments»

1. Raja - April 29, 2009

fantastic maind boloing by Raja Spain

2. Farzana Naina - October 29, 2019

Riaz Maftoon Zadeh
Bahut hi sair e hasil article…aik azeem writer ko bahut shandar kharaj e aqedat paish kiya hai apnay farzana..hum ne young writers forum hamaray daur ki progresive you.g writers ki anjuman thi main secy.gen jab hum ne kitab aur mutala silsila shuru kiya..usmain sibte hasan sahib ki sadarat main Aag Ka Darya ..pehli kitab thi sur naujawano ki pazendidah kitab.hum ijtimaye mutala katay usay samajhnay….phir Akhir e Shab Kay Hamsafar…kiya kehna..
Riaz Maftoon Zadeh
Ishrat Moin Seema
اردو کی بہت بڑی ناول نگار 🌹
Huma Beg
No doubt she is still
Bushra Jalil Ghori
Bohat umda malomati tehrir thanks 🙏🏼
Naheed Virk
بہت دلچسپ مضمون ہے اور اتنی بڑی ناول نگار پر آپ نے چلتے پھرتے یقینا نہیں لکھا بلکہ پوری جان و دل کی محبت کی عرق ریزی سے اتنی ریسرچ کے بعد لکھا ہُوا یہ مضمون آپ کی ادب سے سنجیدگی اور محبت کا گہرا ثبوت ہے۔
بہت اعلی۔
Shaista Mufti Farrukh
کیا ہی بہترین اور تحقیق سے بھرپور مضمون لکھا ہے۔ یہ ہماری بدنصیبی ہے کہ ہم نے اس دور کی بہترین مصنفہ کو اپنے ہاتھوں سے کھو دیا۔ ہمارے تعصبی رویے کسی بھی بڑے آرٹ کے راستے میں رکاوٹ ہیں۔
Shaista Mufti Farrukh
فرزانہ تمھاری بصیرت کے لئے بہت سی ستائش اور داد
طارق اسجد
بہت عمدہ اور دلچسپ مضمون بہت مبارک باد
Mohammad Arif
بے شک
Sofia Anjum Taj
بہت ہی عرق ریزی کی ہے تم نے نینا اور بہت ہی رسرچ کے بعد تم نے اتنا پر اثر مضمون لکھا ہے ۔ بہت ہی خوب ۔ مبارک ہو ۔ ایک بار پھر پڑھنے کا ارادہ ہے
Rafat Alavi
آپ کا نہایت دلچسپ انشائیہ جس کو آپ نے بہت خوبصورتی سے اردو ادب کے سارے دور کو عینی آپا کے ذکر کے ساتھ نتھی کر دیا ھے۔
دو چیزوں کئ تصحیح کرتا چلوں شائد ٹائپنگ کی غلطی ھوگی کہ “اداس نسلیں” کے خالق انتظار حسین نہیں بلکہ عبداللہ حسین تھے اور “تلاش بہاراں” جمیلہ صدیقی نہیں جمیلہ ھاشمی کی تخلیق تھی
Shah Nawaz Khan
بہت عمدہ اور دلچسپ مضمون
Javed Ansari
بے حد شاندار۔ نہایت عرق ریزی سے تحریر کیا گیا تحقیقی مقالہ۔ میں جتنی تعریف کروں کم ہے۔ آپ جیسے لوگوں کو پڑھ کر بہت کچھ سیکھنے کو ملتا ہے۔ بہت شکریہ اور مبارک باد
Jawaid Ahmed
بے شمار داد اس خوبصورت تحریر کے لئے
Shaheen Kazmi
کیا دلچسپ مضمون ہے داد حاضر ہے
Khalid Sajjad Ahmed
بہت ہی اعلی
بہترین اور مفصل مضمون
انتہائی معلوماتی
ایک ہی نشست میں پڑھتے ہوئے لطف آ گیا
آپ کے لئے بہت سی دعائیں اور داد
Ather Ăli
Bohat Aala mazmoon bohat umdagi k sath..
Kaiser Sheraz
آپا کمااال
نہایت تند ہی سے لکھا گیا ایک زبردست تحقیقی مقالہ…
ہر احساس کوبخوبی زبان دینے کا فن قلمکاروں میں جس فصاحت سے محترمہ قرہ العین صاحبہ کے ہاں ملتا ہے…کہیں اور اس روانی اور تازگی کا اثر سر چڑھنے سے قاصر ہے
شاید اسی لیئے ہمیں انکے ناول ابھی تک سب سے یکتا و یگانہ نظر آتے ہیں
Muneer Bhurgri
she was favourite writer in subcontinent..we sindhi use to read and refer her setences to each other…Your tribute Is great…..excellent article
Syed Adil Aziz
بہت خوب یہ تو شاید الفاظ کی تصویر کشی ہے اک سماں سا بندھا ہوا ہے میں پڑھتے پڑھتے ایک نئی دنیا میں پہنچ گیا تھا جب ختم کیا تو احساس ہوا کہ میں یہ پڑھ رہا ہوں.. میں وہاں موجود نہیں
کیا بات ہے محترمہ فرزانہ نیناں صاحبہ
Saleem Fauz
BUHAT KHOOB UMDAH MAZMOON
Waqar Zaidi
واہ بہت اعلی
Tabassum Anwar
انتہائ خوبصورت تحریر ہے فرذانہ۔جسمیں آپ نے قرات العین صاحبہ کی ذندگی اور ناولوں پر سیر حاصل گفتگو کی ھے۔میں نے پورا مضمون آخر تک پڑھا اور بہت لطف اندوذ ہوئ۔شاد رہیں.
Rehana Ahsan
پیاری فرزانہ آج شام میں نے تمھارے خوبصورت اور طویل تحقیقی مضمون پر رات میں لکھنے کا وعدہ کیا تھا۔ مگر کراچی کے ساحلوں پر سمندری طوفان کی بدولت اس وقت نیٹ کام نہیں کررہا اور نہ ہی میسینجر پر سرچ کے بعد تمھاری آیء ڈی اور مضمون مل رہا ہے اس لیےء آج شام ادبی چاشنی لیےءجو دلنشیں مضموں میں نے پڑھا اس پر اپنے تاثرات میں یہاں تحریر کر رہی ہوں
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
حقیقت تو یہ ہے کہ ایک عرصے بعد ایک ایسا جامع اور دلکش مضمون پڑھنے کو ملا کہ جس کی فضاوں میں قرتءلعین حیدر کے ساتھ ساتھ ہماری روح بھی بھی سیر و سفر کرتی رہی دنیا بھر مگر کے منتخب و متفرق مقامات پر اور اسے پڑھکر یوں محسوس ہوا گویا میں نے عہد گزشتہ کی تحریر وں کے لعل وگہر موجودہ دور میں پالیےء ہوں کیونکہ اس وقت تو ہمارے لیجنڈز اہل قلم اپنی شفاف اور خوشبو دار تحریروں میں انسانی روح کی تسکین اور اس کی خوشیوں کا ازحد خیال رکھتے تھے یہ محض تعریف نہیں بلکہ ایک حقیقت کا انکشاف ہے کہ یہ تحریر جن نایاب لوگوں پر لکھی گییء ہے ان کی شخصیت اور طرز فکر کی تمام تر سچاییاںء اور اس عہد کے تقریبن تمام کلچرز اور دلکش رنگ اس میں موجود ہیں میں شکر گزار ہوں کہ مجھے تم نے ایسی شخصیات کی تحریروں پر گفتگو کا موقع دیا جنھیں پڑھ کر روح سیراب ہوجاتی ہے ۔خدا تمھارے قلم کو دن دوگنی اور رات چوگنی ترقی عطا فرماےء۔ آمیں
تمھاری دوست
ریحانہ احسان


Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: